وفاق اور پنجاب میں اقتدار کی جنگ فیصلہ کن مرحلے میں داخل

federal and punjab government

وفاق اور پنجاب میں اقتدار کی جنگ فیصلہ کن مرحلے میں داخل

وفاق اور پنجاب میں اقتدار کی جنگ فیصلہ کن مرحلے میں داخل ہو چکی ہے۔ نمبر گیم کیلئے سیاسی جماعتوں میں زبردست جوڑ توڑ جاری ہے۔مسلم لیگ ن اور متحدہ مجلس عمل پی ٹی آئی کی بازی الٹنے کو تیار ہیں لیکن پیپلزپارٹی آمادہ نظر نہیں آتی ۔مسلم لیگ ن نے صورتحال پر غور کیلئے مشاورتی اجلاس بلا لیا ،فضل الرحمان کہتےہیں متحدہ مجلس عمل کی جماعتیں متحد ہیں،تمام امور اتفاق رائے سے طے ہو رہے ہیں۔

اقتدار کیلئے سنسنی خیزجوڑ توڑ جاری ہے۔ہر کوئی آزاد پنچھیوں کے پیچھےبھاگ رہا ہے ۔ اپوزیشن اتحاد پی ٹی آئی کے ہاتھ آیا اقتدار آسانی سے چھین سکتا ہے ۔مسلم لیگ ن اور ایم ایم اے تو اقتدار اپنے ہاتھ میں لینے کی کوشش کرنے کو تیارہےلیکن پیپلزپارٹی بازی الٹنے پر آمادہ نظر نہیں آتی۔ 7رکنی مذاکراتی کمیٹی بلاول بھٹو سے رہنمائی لینے واپس کراچی چلی گئی۔

ماڈل ٹاؤن لاہور میں ن لیگ کے بڑوں نے بھی سر جوڑ لئے ۔شہباز شریف نومنتخب 129اراکین کے ساتھ حتمی مشاورت کریں گےاور مرکز اور پنجاب میں اپوزیشن لیڈر کیلئے مشاورت بھی ہوگی

ادھر ایم ایم نے الیکشن کے خلاف احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کردیا ہے۔فضل الرحمان کہتے ہیں احتجاج ہمارا آئینی و قانونی حق ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ 2013 انتخابات کے بعد پاکستان تحریک انصاف کا احتجاج جس دھرنے کی صورت اختیار کر گیا تھا کہ ایم ایم اے کا احتجاج بھی ویسا ہی ہوگا؟فضل الرحمان کے مطابق مختلف طریقوں سے ایم ایم اے میں نااتفاقی کی افواہیں پھیلائی جا رہی ہیں۔ان افواہوں کا حقائق سے کوئی تعلق نہیں ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to top