کیپٹن صفدر کا نام مریم نواز کے زیرکفالت افراد میں کیوں؟

maryam nawaz and captain safdar

کیپٹن صفدر کا نام مریم نواز کے زیرکفالت افراد میں کیوں؟

مریم نوازشریف کے اثاثے

الیکشن کمیشن آف پاکستان کی شرط کے مطابق قومی و صوبائی اسمبلی کے ہر امیدوار کے لیے لازم ہے کہ وہ اپنے اثاثے بھی ظاہر کرے گا۔ اس سلسلے میں سابق وزیراعظم نوازشریف کی بیٹی مریم نواز کی جانب سے جمع کرائے گئے کاغذات نامزدگی میں ظاہر کیے گئے اثاثوں کے مطابق وہ 1506کنال کی زرعی اراضی کی مالک ہیں، جس میں گذشتہ تین سال میں 548کنال کا اضافہ بھی دکھایا گیا ہے۔ اس کے علاوہ مریم نواز چوہدری شوگر ملز، حدیبیہ پیپر ملز، حدیبیہ انجینئرنگ لمیٹڈ، حمزہ اسپننگ ملز اور محمد بخش ٹیکسٹائل ملز میں شیئر ہولڈر بھی ہیں۔ انہوں نے فیملی کی زیر تعمیر فلور ملز میں چونتیس لاکھ روپے کی سرمایہ کاری بھی کر رکھی ہے اور ایک پرائیویٹ کمپنی کو ستر لاکھ قرض بھی دے رکھا ہے۔

زیورات، تحائف اور غیرملکی دورے

ظاہر کیے گئے اثاثوں کے مطابق مریم نواز سترہ لاکھ روپے کے زیورات کی بھی مالک ہیں۔ کاغذات کے مطابق وہ اپنے بھائی حسن نواز کی دو کروڑ انانوے لاکھ کی مقروض بھی ہیں۔ اس کے علاوہ انہیں چاکروڑ بانوے لاکھ کے تحفے بھی ملے ہیں۔ دستاویز کے مطابق گذشتہ تین سالوں کے دوران غیرملکی دوروں پر مریم نواز نے چونسٹھ لاکھ روپے خرچ کیے۔

کیپٹن ریٹائرڈ صفدر مریم نواز کی زیرکفالت،کیوں؟

اثاثوں سے متعلق بیان حلفی میں ایک فارم ہے جس میں ان لوگوں کا اندراج کیا گیا ہے جو ان کے زیر کفالت ہیں۔ مریم نواز کے زیر کفالت افراد میں تین نام درج ہیں جن میں سے ایک ان کا بیٹا جنید صفدر، بیٹی ماہ نور صفدر اور شوہر محمد صفدر بھی شامل ہیں۔ لیکن اپنے قارئین کو ہم بتاتے چلیں کہ زیرکفالت افراد کے فارم کے اوپر دی گئی شقD میں یہ ذکر بھی کیا گیا ہے کہ اس فارم میں اپنے شریک حیات اور زیرکفالت افراد کا نام بھی لکھیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to top