ایم ایم اے نے تمام حلقے دوبارہ کھولنے کا مطالبہ کر دیا

MMA Demand reopen all constituencies

ایم ایم اے نے تمام حلقے دوبارہ کھولنے کا مطالبہ کر دیا

متحدہ مجلس عمل کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے عام انتخابات میں بدترین دھاندلی کے الزامات لگاتے ہوئے تمام حلقے دوبارہ کھولنے کا مطالبہ کردیا۔مولانا فضل الرحمان کہتےہیں ہارس ٹریڈنگ سے بنی ہوئی حکومت قوم کو قبول نہیں۔تحریک انصاف کے پاس اکثریت نہیں ہے وہ صرف دھاندلی کے نتیجے میں ایک بڑی پارٹی کے طور پرسامنے آئی ہے،جو لوگ دھاندلی سے نکل کر ایوانوں میں پہنچے ہیں حکومت ان کا حق ہے۔

ایم ایم اے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ اسمبلی میں حلف اٹھانے یا نہ اٹھانے کے حوالے سے جماعت اسلامی کی تجویز پرتمام دینی جماعتوں نے اتفاق رائے کیا ہے،دینی جماعتوں کی بھی عوام میں مقبولیت اور گہری جڑیں ہیں۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ الیکشن کمیشن کا کہنا ہے الیکشن شفاف ہوئے ہیں، ہم الیکشن کمیشن کے اس دعوے کو غلط اور بے بنیاد کہہ چکے ہیں۔عمران خان نے کہا تھا کوئی چاہتا ہے تو ہم تمام حلقوں کو کھولنے کیلئے تیار ہیں۔ایسے معاملات پر حکومت قائم نہ کی جائے جس کے نتیجے نہیں آئے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کے پاس اکثریت نہیں اس کے اکثریت کے دعوے غلط ہیں۔وہ کیسے کابینہ بناسکتے ہیں، ان کے پاس عددی اکثریت موجود نہیں۔پی ٹی آئی دنیا کو دکھا رہی ہے وہ اکثریت میں ہے یہ تاثر غلط ہے۔
حلف نہ اٹھانے کے معاملے پر ان کا کہنا تھا کہ اسمبلی میں حلف اٹھانے یا نہ اٹھانے کے حوالے سے جماعت اسلامی کی تجویز آئی۔اس تجویز پر تمام دینی جماعتوں نے اتفاق رائے کیا ہے،پی ٹی آئی اس وقت تاریخ کی بدترین ہارس ٹریڈنگ کر رہی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to top