قومی اسمبلی کے سب سے زیادہ آبادی والے حلقے

populous constituency

قومی اسمبلی کے سب سے زیادہ آبادی والے حلقے

25جولائی 2018 کو ملک میں انتخابات کا ہنگامہ برپا ہونے جارہا ہے۔ اس سلسلے میں نئے اصولوں کی بنیاد پر حلقہ بندیاں کی گئ ہیں۔ ان حلقہ بندیوں میں یہ اصول اختیار کیا گیا تھا کہ ہر صوبے کے لحاظ سے اوسط آبادی کو معیار بنایا جائے گا مثال کے طور پر پنجاب میں قومی اسمبلی کی نشستوں کی اوسط آبادی سات لاکھ اسی ہزار مقرر کی گئی تھی، اسی طرح فاٹا میں اوسط سات لاکھ اناسی ہزار مقرر تھی۔ لیکن جو حلقہ بندیاں سامنے آئی ہیں اس میں یہ اصول لاگو ہوتا نظر نہیں آرہا، کیونکہ بعض حلقے ایسے ہیں جن کی کل آبادی تین لاکھ کے آس پاس ہے جبکہ چھ حلقے ملک میں ایسے بھی ہیں جن کی آبادی دس لاکھ سے بھی زیادہ ہے۔ آئیے دیکھتے ہیں کہ قومی اسمبلی کے وہ کونسے حلقے ہیں جو آبادی کے لحاظ سے سرفہرست ہیں۔ ان سرفہرست چھ حلقوں کے حوالے سے اگر آپ سوچ رہے ہیں کہ یہ کراچی یا لاہور کے حلقے ہوں گے تو آپ کا خیال غلط ہے۔ کیونکہ یہ تمام حلقے دیہی ہیں۔

خیبر پختونخوا میں بنوں کا حلقہ این اے 35 آبادی کے لحاظ سے پاکستان کا سب سے بڑی قومی اسمبلی کا حلقہ ہے۔ اس کی کل آبادی گیارہ لاکھ چھیاسٹھ ہزار آٹھ سو بانوے ہے۔

پنجاب کے ضلع حافظ آباد کا حلقہ این اے 87 آبادی کے لحاظ سے پاکستان کا دوسرا بڑا قومی اسمبلی کا حلقہ ہے جس کی کل آبادی گیارہ لاکھ چھپن ہزار نوسوستاون ہے۔

سندھ کے علاقے کشمور کا حلقہ این اے 197 ہے جہاں دس لاکھ انانوے ہزار ایک سو انہتر لوگ رہتے ہیں جو آبادی کے لحاظ سے پاکستان کا تیسرا بڑا حلقہ ہے۔

بلوچستان کا حلقہ این اے 268 آبادی کے لحاظ سے چوتھا بڑا قومی حلقہ ہے۔ اس حلقے کی کل آبادی دس لاکھ تراسی ہزار چار سو ستانوے ہے۔ اس حلقے کی ایک خاص بات یہ بھی ہے کہ اس ایک حلقے میں پانچ اضلاع مستونگ، چاغی، قلات، شہید، سکندر آباد اور نوشکی شامل ہیں۔

 

سندھ کا حلقہ این اے 196 اس فہرست میں پانچویں نمبر پر ہے ، اس حلقے کی آبادی دس لاکھ چھ ہزار دو سو ستانوے ہے۔

دس لاکھ سے زیادہ آبادی والا چھٹا قومی حلقہ ہے خیبر پختونخوا کا این اے 17 جس کی آبادی دس لاکھ تین ہزار اکیس ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to top