23b-پاکستان نے بھارت کو گھیرنے کا منصوبہ بنایا تھا؟

23b-پاکستان نے بھارت کو گھیرنے کا منصوبہ بنایا تھا؟

 آئی ایس آئی اور بھارتی خفیہ ایجنسی را کے سابق سربراہان کی تہلکہ خیز کتاب(Spy Chronicles) کا خلاصہ ۔۔۔ تئیسواں باب (پارٹ ٹو)

پاکستان کو مغربی محاذ پر کن چیلنجز کا سامنا ہے:

جنرل درانی کہتے ہیں کہ پاکستان کو مغربی محاذ پر کئی چیلنجز کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنرل مشرف کئی لوگوں کو امریکہ کے حوالے کرتے رہے۔ انہوں نے اپنی کتاب میں بھی اس بات کا اظہار کیا ہے۔ جنرل مشرف نے قبائلی علاقوں میں فوج بھیجی تھی۔ وہ کہتے ہیں کہ اس کارروائی کا نتیجہ تحریک طالبان پاکستان کی شکل میں ظاہر ہوا۔ لوگ اس بات پر ناراض تھے کہ ہم نے ان کے قبائلی بھائیوں کے خلاف امریکہ کا ساتھ کیوں دیا۔

ماؤ نواز باغیوں اور تامل حملوں کا الزام پاکستان پر نہیں لگایا جا سکتا

امرجیت سنگھ دلت کہتے ہیں کہ جو کچھ بھی بھارت میں ہوتا ہے اس کا الزام آئی ایس آئی اور پاکستان پر لگایا جاتا ہے۔ صرف ماؤ نواز باغیوں کے معاملے میں ہم پاکستان کو الزام نہیں دے سکتے۔ جبکہ تامل ٹائیگرز کے ہاتھوں راجیو گاندھی کے قتل کا الزام بھی پاکستان کے سرنہیں جاتا۔

پاکستان نہیں ٹوٹ سکتا، را چیف کا اعتراف

امرجیت سنگھ دلت کہتے ہیں کہ ان کے کچھ کولیگ پاکستان توڑنے کی باتیں کرتے تھے۔ میں نے کہا کہ ایسا نہیں ہو گا اور اس کی کئی وجوہات ہیں۔ ایک تو یہ کہ پاکستان دوسروں کے سہارے چلنے والی کمزور ریاست (banana republic) نہیں ہے اور دوسرا یہ کہ دنیا بھر میں کوئی بھی پاکستان توڑنے میں دلچسپی نہیں رکھتا۔

پاکستان نے بھارت کو گھیرنے کا منصوبہ بنایا تھا؟

امرجیت سنگھ دلت کہتے ہیں کہ پاکستان نے بھارت کو گھیرنے کا منصوبہ بنایا تھا۔ اس منصوبے کو کے ٹو، کشمیر، خالصتان منصوبے کا نام دیا گیا۔ تاہم جب جنرل درانی سے پوچھا گیا کہ کیا ایسا کوئی منصوبہ موجود تھا تو انہوں نے اس کا جواب نفی میں دیا۔ جنرل درانی نے بتایا کہ ان کی ایک بھارتی صحافی بھرت بھوشن سے ملاقات ہوئی تھی۔ بھرت بھوشن نے جنرل درانی سے کہا کہ کارگل کے بعد حمید گل نے کہا تھا کہ بھارت ہمارے لئے بہت بڑا ہے اسے ٹکڑوں میں کرنا ہو گا۔ جنرل درانی کہتے ہیں اگر بھارت، پاکستان کو نہیں توڑ سکتا تو پاکستان کیسے بھارت کو توڑ سکتا ہے۔ پاکستان جنوبی بھارت میں نکسل باغیوں کی تحریک تک رسائی حاصل نہیں کرسکتا۔ صرف اگر بھارتی خود اپنے ملک کو توڑنا چاہیں تو انہیں کوئی نہیں روک سکتا۔ وہ کہتے ہیں بھارت میں ہونے والی ہر بات کا الزام آئی ایس آئی کو دیا جاتا ہے لیکن تب کوئی نہیں بولا جب منوہر لال جوشی سرینگر میں جھنڈا لہرانے پہنچے تھے۔ جنرل درانی نے کہا کہ کئی لوگ کہتے ہیں کہ جس ڈنڈے پریہ جھنڈا لہرایا جا رہا تھا وہ بھی آئی ایس آئی نے بنایا تھا اسی لئے جھنڈا نیچے گر گیا۔

ہم مودی کو نہیں پہچان سکے

بھارتی صحافی نے جنرل درانی سے پوچھا کہ مودی بھی لعل چوک میں جھنڈا لے کر گئے تھے کیا آپ معلوم نہیں کر سکے یہ مستقبل کے وزیراعظم ہوں گے۔ جواب میں جنرل درانی نے کہا کہ ہاں یہ بڑی ناکامی تھی۔ وہ کہتے ہیں شاید آئی ایس آئی نے منوہر لال جوشی کا جھنڈا گرا دیا لیکن اسے چھوڑ دیا کیونکہ وہ مستقبل میں وزیراعظم نہیں بن سکتا تھا۔

کیا آئی ایس آئی مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جھنڈے گراتی ہے؟

امرجیت سنگھ دلت کہتے ہیں کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جھنڈے گرنے کی پوری تاریخ ہے۔ مقبوضہ کشمیر کی موجودہ کٹھ پتلی وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی کے ساتھ بھی سرینگر میں ایسا ہی واقعہ ہوا جس پر انہوں نے انکوائری کا حکم دیا۔ بھارتی صحافی نے پوچھا کہ کیا یہ جھنڈا بھی آئی ایس آئی نے گرایا تھا؟ اس پر دلت کہتے ہیں کہ انہوں نے انکوائری رپورٹ نہیں دیکھی لیکن ہو سکتا ہے کہ یہ آئی ایس آئی ہی کا کام ہو۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to top